ہم سے رابطہ کیجیئے   پہلا صفحہ   سائیٹ کا نقشہ   انگليسي   العربيه   فارسي  


امریکہ؛

عیسائی طالبات کا یونیورسٹی میں اسکارف کے ساتھ آنے کا فیصلہ


مسیحی یونیورسٹی میں اسلاموفوبیا کی مخالفت کے اظھار میں طالبات ہر بدھ کو چادر پہنچ کر یونیورسٹی میں حاضر ہوں گی
امریکہ؛بدھ کو عیسائی طالبات اسکارف اوڑھیں گی

 ریاست یوٹا کی «بریگم یانگ» یونیورسٹی میں طالبات نے اسلاموفوبیا کی مخالفت اور مسلمانوں سے اظھار یک جہتی کے لیے ہر بدھ کو حجاب کے ساتھ یونیورسٹی میں آنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔


گذشتہ تین ہفتوں سے جاری اس مہم نے سب کو حیرت میں ڈال دیا ہے۔

طالبات میں اکثر مورمون‌ کلیسا سے وابستہ عیسائی لڑکیاں شامل ہیں جو میڈل ایسٹ کے مطالعے پر کام کررہی ہیں ۔


ان طالبات کا کہنا ہے کہ اس مہم کا مقصد تعصب اور نفرت کی فضا کا مقابلہ کرنا ہے تاکہ معاشرے میں ہم آہنگی اور رنگا رنگی کو فروغ دیا جاسکے اور ساتھ ہی مسلمانوں کو بھی یہ پیغام دینا ہے کہ وہ اکیلے نہیں۔

امریکہ؛ عیسائی طالبات کا یونیورسٹی میں اسکارف کے ساتھ آنے کا فیصلہ


طالبات نے فیس بک پیجیز پر دیگر طالبات سے بھی درخواست کی ہیں کہ وہ بھی ہر بدھ کو چادر پہن کر یونیورسٹی میں مسلمان طالبات سے یک جہتی کا اظھار کریں ۔

محجبہ طالبات کا کہنا ہے کہ یہ مہم سال نو تک جاری رہے گی ۔
نیوز کوڈ:38760
ماخذ:iqna.ir
تاریخ:1/2/2017