ہم سے رابطہ کیجیئے   پہلا صفحہ   سائیٹ کا نقشہ   انگليسي   العربيه   فارسي  


سربیا کے شہر «پرشوا» کی پہلی حافظہ قرآن


حافظہ«الما زین‌الله» جنوبی سربیا کے شہر «پرشوا» میں مقیم ہے
 اٹھارہ سالہ «الما زین‌الله» کو سربیا کے شہر «پرشوا» کی پہلی حافظہ قرآن ہونے کا اعزاز حاصل ہے

اٹھارہ سالہ الما زین‌الله کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ اس وقت وہ پہلی حافظہ قرآن ہے اور اس شہر میں ٹوٹل دو حافظ قرآن موجود ہیں جبکہ دوسرا حافظ قرآن فرد ایک مرد ہے

المازین اللہ کا کہنا ہے کہ شروع میں عربی الف با سے نا واقف ہونے کی بناء پر مجھے حفظ کرنا سخت عمل لگا مگر ایک مرد ٹیچر کی رہنمائی اور کوششوں سے میں نے روخوانی سیکھی اور پھر حفظ کرنا شروع کیا۔

انکا کہنا ہے : قرآن مجید حفظ کرنے کے بعد میری زندگی میں بہتری آئی اور کالج میں بھی میری پڑھائی بہت بہتر ہوئی اور میرے خیال میں قرآن حفظ کرنے کی لذت انتہائی خوشگوار ہے۔

پہلی خاتون حافظہ قرآن ہونے کے حوالے سے انکا کہنا ہے کہ لوگ سمجھتے ہیں کہ خواتین مشکل کام انجام نہیں دے سکتی حالانکہ میں کہتی ہوں کہ خواتین میں بہت عزم اور مضبوط ارادہ پایا جاتا ہے اور وہ اس بنیاد پر ایک کامیاب نسل کی پرورش کرسکتی ہے۔
نیوز کوڈ:38772
ماخذ:iqna.ir
تاریخ:1/2/2017